ابن الہیثم

ابن الہیثم

حسن ابن الہیثم کا پورا نام ابو علی الحسن ابن الحسن الہیثم تھا۔  آپ  ۹۶۵ء میں پیدا ہوئے اور آپ کا انتقال ۱۰۴۰ میں ۷۰ کی عمر میں قاہرہ میں ہوا ۔ ابن الہیثم نے خاص طور پر آپٹکس اور بصری تاثر کے اصولوں میں نمایاں شراکت کی۔ آپ پہلے مسلم سائنسدان ہیں جو كتاب المناظر (بک آف آپٹکس) کے ليۓ مشہور ہیں۔ آپ نے ٹالمی سے متعلق شک و شبہات، الہازين کی پريشانی اور بصری تاثر کا تعارف نظریہ پیش کيا۔ آج آپ کو اسلامی سنہری دور کے ماہر طبيعیات اور “جدید آپٹکس کے والد” کے نام سے جانا جاتا ہے۔  

ان کی سب سے متاثر کن کتاب کا نام ‘کتاب المناظر’ہے جو ۱۰۱۱ سے ۱۰۲۱ کے درمیان لکھی گئ۔ یہ کتاب لاطینی ایدیشن میں زندہ رہی اور ایک پولیمیتھ، فلسفہ، الہیات اور طب پر لکھی گئ۔ ابن ال ہیتھم اس تصور کے ابتدائی حامی تھے کہ تجزیے کی تائید تصدیق کے طریقہ کار یا ریاضی کے ثبوت کی بنیاد پر کی جانی چاہیے۔ ابن الہیتھم نے سب سے پہلے یہ بیان کیا کہ یہ بینائ اس وقت ہوتی ہے جب روشنی کسی شے سے جھللکتی ہے اور پھر کسی کی آنکھوں میں جاتی ہے۔ انھوں نے یہ بھی ظاہر کیا کہ یہ ویژن آنکھوں کے بجاۓ دماغ پر ہوتا ہے۔ قدیم یونان میں ارسطو کے ذریعے ایک فطری،تجرباتی طریقہ کار کی تعمیر ابن الہیتھم کے اس تصور پر کی جانی چاہیے جو کہ تجزیے کی تائید تصدیق کے طریقہ کار یا ریاضی کے ثبوتوں پر مبنی ہو۔

انھوں نے اپنا بیشتر پیداواری دور فاطمہ کے دارالحکومت قاہرہ میں گزارا اور اپنی زندگی گزارنے کے لئے مختلف مقالے لکھے اور اشرفیہ کے ممبروں کو تعلیم دی۔ ابن الہیتھم کی تحقیقات نے جسمانی آپٹکس کی جدید سائنس کی راہ ہموار کی اور صحیح معنوں میں ابوالحسن بیہقی اور جان پیہم سے “The Physicist”  کا خطاب پایا۔

Written by: